Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

مصر کی فتح ۲۰ ہجری(۶۴۱ء) (عہد زریں۔476

مصر کی فتح ۲۰ ہجری(۶۴۱ء)

عہد زریں (شمارہ 476)

مصر کی فتح اگرچہ فاروقی کارناموں میں داخل ہے لیکن اس کے بانی مبانی حضرت عمرو بن العاصؓ تھے۔ وہ اسلام سے پہلے تجارت کا پیشہ کرتے تھے اور مصران کی تجارت کا جو لانگاہ تھا، اس زمانے میں مصر کی نسبت گو اس قسم کا خیال بھی ان کے دل میں نہ گزرا ہوگا لیکن اس کی زرخیزی اور شادابی کی تصویر ہمیشہ ان کی نظر میں پھرتی رہتی تھی۔حضرت عمرؓ نے شام کا جو اخیر سفر کیا اس میں یہ ان سے ملے اور مصر کی نسبت گفتگو کی۔ حضرت عمرؓ نے پہلے احتیاط کے لحاظ سے انکار کیالیکن آخر ان کے اصرار پر راضی ہوگئے اور چار ہزار فوج ساتھ کردی۔ اس پر بھی ان کا دل مطمئن نہ تھا،حضرت عمروؓ سے کہا کہ اللہ کا نام لے کر روانہ ہو لیکن مصر پہنچنے سے پہلے اگر میراخط پہنچ جائے تو اُلٹے پھر آنا۔

عریش پہنچے تھے کہ حضرت عمرؓ کا خط پہنچا۔ اگرچہ اس میں آگے بڑھنے سے روکا تھا لیکن چونکہ شرطیہ حکم تھا۔حضرت عمروؓ نے کہا کہ اب تو ہم مصر کی حد میں آچکے۔ غرض عریش سے چل کر فرما پہنچے یہ شہر بحرروم کے کنارے پر واقع ہے اور گو اب ویران پڑا ہے لیکن اس زمانے میں آباد اور جالینوس کی زیارت گاہ ہونے کی وجہ سے ایک ممتاز شہر شمار ہوتا تھا۔ یہاں سرکاری فوج رہتی تھی اس نے شہر سے نکل کر مقابلہ کیا اور ایک مہینے تک معرکہ کارزار گرم رہا۔ بالآخر رومیوں نے شکست کھائی۔حضرت عمروؓ فرما سے چل کر بلبیس اور ام دنین کو فتح کرتے ہوئے فسطاط پہنچے، فسطاط اس زمانے میں کف دست میدان تھا اور اس قطعہ زمین کا نام تھا جو دریائے نیل اور جبل مقطم کے بیچ میں واقع ہے اورجہاں اس وقت زراعت کے کھیت یاچراہ گاہ کے تختے تھے۔

 لیکن چونکہ یہاں سرکاری قلعہ تھا اور رومی سلطنت کے حکام جو مصر میں رہتے تھے یہاں رہا کرتے تھے۔ اس کے علاوہ چونکہ دریائے نیل پر واقع تھا اور جہاز اور کشتیاں قلعہ کے دروازے پر آکر لگتی تھیں۔ ان وجوہ سے سرکاری ضرورتوں کے لیے نہایت مناسب مقام تھا،حضرت عمروؓ نے اول اسی کو تاکا اور محاصرہ کی تیاریاں شروع کیں۔

 ٭…٭…٭

Ehad-e-Zareen-476

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor