Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

صحابۂ کرام رضی اللہ عنہم کا باہمی اتحادواتفاق (تابندہ ستارے۔692)

صحابۂ کرام رضی اللہ عنہم کا باہمی اتحادواتفاق

تابندہ ستارے ۔ حضرت مولانا محمدیوسفؒ کاندھلوی (شمارہ 692)

خلافت لوگوں کو واپس کرنا

حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ نے فرمایا:اے لوگو! اگر تمہارا یہ گمان ہے کہ میں نے تمہاری یہ خلافت اس لیے لی ہے کہ مجھے اس کے لینے کا شوق تھا یامیں تم پر اور مسلمانوں پر فوقیت حاصل کرنا چاہتا تھا تو ایسی بات ہرگز نہیں ہے۔ اس ذات کی قسم جس کے قبضہ میں میری جان ہے! میں نے یہ خلافت نہ تواپنے شوق سے لی ہے اور نہ تم پر اور نہ کسی مسلمان پر فوقیت حاصل کرنے کے لیے لی ہے اور (زندگی بھر) نہ کسی رات میں نہ کسی دن میں میرے دل میں اس کی طلب پیدا ہوئی اور نہ کبھی چھپ کر اور نہ کبھی علی الاعلان میں نے اللہ سے اسے مانگا ہے اور میں نے بڑی بھاری ذمہ داری اٹھالی ہے جس کی مجھ میں طاقت نہیں ہے، ہاں اگر اللہ میری مدد فرمائے( تو اوربات ہے) میں تو یہ چاہتا ہوں کہ حضورﷺ کا کوئی صحابی اس خلافت کو سنبھال لے بشرطیکہ وہ اس میں انصاف سے کام لے۔ لہٰذایہ خلافت میں تمہیں واپس کرتا ہوں اور تمہاری مجھ سے بیعت ختم۔ تم جسے چاہو اسے خلافت دے دو، میں تم میں کاایک آدمی بن کر رہوں گا۔

 حضرت عیسیٰ بن عطیہ کہتے ہیں:حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ نے اپنی بیعت سے اگلے دن کھڑے ہو کر لوگوں میں بیان فرمایا :اے لوگو!میرے خلیفہ بنانے کے بارے میں) تمہاری جو رائے ہے وہ میں نے تم کو واپس کر دی ہے، کیونکہ میں تمہارا بہترین آدمی نہیں ہوں۔ تم اپنے بہترین آدمی سے بیعت ہوجائو۔ تمام لوگوں نے کھڑے ہو کر کہا:اے رسول اللہﷺ کے خلیفہ! اللہ کی قسم ! آپ ہمارے بہترین آدمی ہیں ۔ پھر حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ نے فرمایا:اے لوگو! لوگ اسلام میں خوشی اور ناخوشی (دونوںطرح) داخل ہوئے ہیں ۔ لیکن اب وہ سب اللہ کی پناہ اور اس کے پڑوس میں ہیں، اس لیے تم اس کی پوری کوشش کرو کہ اللہ تعالیٰ تم سے اپنی ذمہ داری کا کچھ بھی مطالبہ نہ کرے( یعنی کسی مسلمان کوکسی طرح کی تکلیف نہ پہنچائو)میرے ساتھ بھی ایک شیطان رہتا ہے۔جب تم دیکھو کہ مجھے غصہ آگیا ہے تو پھر تم مجھ سے الگ ہوجائو، کہیں میں تمہارے بالوں یا کھالوں کوتکلیف نہ پہنچا دوں۔

اے لوگو! اپنے غلاموں کی آمدن کی تحقیق کرلیا کرو۔( کہ حلال ہے یا حرام) اس لیے کہ جس گوشت کی پرورش حرام مال سے ہو وہ جنت میں داخل ہونے کے لائق نہیں۔ غور سے سنو! اپنی نگاہوں سے میر ی نگرانی کرو۔ اگر میں سیدھا چلوں تو تم میری مدد کرواور اگر میں ٹیڑھا چلوں تو تو تم مجھے سیدھا کردو۔اگر میں اللہ کی اطاعت کروں تو تم میری بات مانو اور اگر میں اللہ کی نافرمانی کروں تو تم میری بات نہ مانو۔

 حضرت ابوا لجحاف کہتے ہیں کہ جب حضرت ابو بکررضی اللہ عنہ سے لوگوں نے بیعت کرلی تو انہوں نے تین دن تک اپنا دروازہ بند کیے رکھا اور روزانہ باہر آکر لوگوں سے کہتے تھے:اے لوگو! میں نے تم کوتمہاری بیعت واپس کردی ، لہٰذا اب تم جس سے چاہو بیعت ہوجائو۔اور ہر مرتبہ حضرت علی بن ابی طالب رضی اللہ عنہ کھڑے ہوکر کہتے: نہ ہم آپ کی بیعت واپس کرتے ہیں اورنہ آپ سے بیعت کی واپسی کامطالبہ کرتے ہیں۔حضورﷺ نے ( اپنی زندگی میں مسلمانوں کی امامت کے لیے) آپ ؓ کو آگے بڑھایا تھا، اب کون آپؓ کو پیچھے کر سکتا ہے۔

حضرت زیدبن علی اپنے آباء( یعنی بڑوں ) سے نقل کرتے ہیں کہ حضرت ابوبکررضی اللہ عنہ نے رسول اللہﷺ کے منبر پر کھڑے ہو کر تین مرتبہ فرمایا:کیا کوئی میری بیعت کو ناپسند سمجھنے والا ہے تا کہ میں اس کی بیعت واپس کردوں؟ اور ہر مرتبہ حضرت علی بن ابی طالب رضی اللہ عنہ کھڑے ہو کر کہتے:نہ ہم آپ کی بیعت واپس کرتے ہیں اور نہ آپؓ سے بیعت کی واپسی کا مطالبہ کرتے ہیں۔ جب رسول اللہﷺ نے آپؓ کو آگے بڑھایا ہے تو اب آپؓ کو کون پیچھے کر سکتا ہے۔

 کسی دینی مصلحت کی وجہ سے خلافت قبول کرنا

حضرت رافع بن ابو رافع کہتے ہیں کہ جب لوگوں نے حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ کو خلیفہ بنایا تو میں نے کہا:یہ تو میرے وہی ساتھی ہیں، جنہوں نے مجھے حکم دیا تھا کہ میں دو آدمیوں کا بھی امیر نہ بنوں( اور خود سارے مسلمانوں کے امیر بن گئے ہیں) چنانچہ میں (اپنے گھر سے ) چل کر مدینہ منورہ پہنچا اور میںنے حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ کے سامنے آکر ان سے عرض کیا: اے ابو بکرؓ!کیا آپ مجھ کو پہچانتے ہیں؟حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ نے کہا:ہاں۔ میں نے کہا:کیا آپ کو وہ بات یا د ہے جو آپ نے مجھے کہی تھی کہ میں دو آدمیوں کا بھی امیر نہ بنوں؟اور آپ خود ساری امت کے امیر بن گئے ہیں۔(یعنی آپ نے جومجھے نصیحت کی تھی خود اس کے خلاف عمل کررہے ہیں)

(جاری ہے)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor