Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

خواتین اسلام سے رسول اکرمﷺ کی باتیں (شمارہ 654)

خواتین اسلام سے رسول اکرمﷺ کی باتیں

(شمارہ 654)

پس زبان کی حفاظت کی بہت زیادہ ضرورت ہے،حضور اقدسﷺ کا ارشاد ہے کہ بلاشبہ بندہ کبھی اللہ کی رضا مندی کا کوئی ایسا کلمہ کہہ دیتا ہے کہ جس کی طرف اسے دھیان بھی نہیں ہوتا اور اس کی وجہ سے اللہ تعالیٰ اس کے بہت سے درجات بلند فرمادیتا ہے اور بلاشبہ بندہ کبھی اللہ تعالیٰ کی ناراضگی کا کوئی ایسا کلمہ کہہ گزرتا ہے کہ اس کی طرف اس کا دھیان بھی نہیں ہوتا اور اس کی وجہ سے دوزخ میں گرتا چلا جاتا ہے ۔ (بخاری)

ایک حدیث میں ارشاد ہے کہ ا نسان اپنی زبان کی وجہ سے اس سے بھی زیادہ پھسل جاتا ہے جتنا اپنے قدم سے پھسلتا ہے۔(بیہقی فی شعب الایمان)

حضرت ابوسعیدخدری رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضوراقدسﷺ نے ارشادفرمایا: جب صبح ہوتی ہے تو سب اعضاء عاجزی کے ساتھ زبان سے کہتے ہیں کہ تو ہمارے بارے میں اللہ تعالیٰ سے ڈر،  کیونکہ ہم تجھ سے متعلق ہیں(یعنی ہماری خیروعافیت اور دکھ تکلیف تجھ سے متعلق ہے) پس اگر تو ٹھیک رہی تو ہم بھی ٹھیک رہیں گے اور اگر تجھ میں کجی آگئی تو ہم میں بھی کجی آجائے گی۔(ترمذی)

کجی ٹیڑھے پن کو کہتے ہیں، مطلب یہ ہے کہ ٹیڑھی چلی اور تونے بے راہی اختیار کی تو ہماری بھی  خیر نہیں،دیکھو کہ گالی زبان دیتی ہے اور اس کے عوض جوتا سر پر پڑتا ہے۔

حضرت عقبہ بن عامررضی اللہ عنہ نے بیان فرمایا کہ میں نے رسول اللہﷺ سے ملاقات کی اور عرض کیا کہ نجات کی کیا صورت ہے؟ آپﷺ نے فرمایا: زبان کو قابو میں رکھو اور اپنے گھر میں اپنی جگہ رکھو(یعنی زیادہ تر اپنے گھر ہی رہو،باہر بہت کم نکلو کیونکہ گھر کے باہر بہت سے فتنے ہیں) اور اپنے پروردگار پر رویا کرو۔(ترمذی)

حضرت سفیان بن عبداللہ ثقفی رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ میں نے عرض کیا: یارسول اللہ! آپ کو مجھ پر سب سے زیادہ کس چیز کا خوف ہے؟ تو آپﷺ نے اپنی زبان مبارک پکڑی اور فرمایا کہ سب سے زیادہ اس کا خوف ہے۔(ترمذی)

ان احادیث سے معلوم ہوا کہ زبان کی بہت زیادہ حفاظت کی ضرورت ہے، مومن بندوں میں لازم ہے کہ اپنی زبان کو ہروقت ذکر وتلاوت میں مشغول رکھیں اور بقدرضرورت تھوڑی بہت دنیاوی ضرورتوں کے لیے بھی بات کرلیا کریں۔

ایک حدیث مبارکہ میں ارشا د ہے کہ اللہ کے ذکر کے علاوہ زیادہ مت بولاکرو کیونکہ اللہ کے ذکر کے علاوہ زیادہ بولنا دل میں سختی پیدا ہونے کا سبب ہے اور اللہ سے زیادہ دور وہی شخص ہے جس کا دل سخت ہو۔(ترمذی)

ایک اور حدیث میں فرمایا کہ انسان کی ہر بات اس کے لیے وبال ہے،نفع دینے والی نہیں ہے سوائے اس کے کہ امربالمعروف کرے(یعنی نیکیوںکا حکم دے) یانہی عن المنکر کرے(یعنی برائیوں سے روکے)یا اللہ کا ذکر کرے۔(ترمذی)

اس سے معلوم ہوا کہ جس بات کے کرنے میں گناہ نہیں ہے اور ثواب بھی نہیں جس کو کلام مباح کہتے ہیں اس سے بھی پرہیز کرنا چاہیے،کیونکہ وہ بھی وبال کا باعث ہے اور وجہ اس کی یہ ہے کہ جتنی دیر میں وہ بات کی ہے اتنی دیر میں ذکر اور تلاوت اور درود شریف میں مشغول ہوکر جوثواب اور بلند درجات حاصل ہوسکتے تھے ان سے محرومی ہوگئی، دوسرا نقصان یہ ہے کہ ذکر اللہ کے علاوہ زیادہ بولنے سے دل میں سختی آجاتی ہے اور تجربہ کیا گیا ہے کہ اس کی وجہ سے دل کی نورانیت ختم ہوجاتی ہے۔

اور یہ بھی تجربہ کی بات ہے کہ زیادہ بولنے والااگرجائز بات بھی کررہا ہو تو بولتے بولتے گناہوں میں مبتلا ہوجاتا ہے،یعنی اس کی زبان سے تھوڑی ہی دیر میں ایسی باتیں نکلنی شروع ہوجاتی ہیں جو گناہ کی باتیں ہوتی ہیںمثلاً کوئی جھوٹی بات نکل جاتی ہے اور یہ تو بہت زیادہ ہوتا ہے کہ باتیں کرتے کرتے خواہ مخواہ کسی کی غیبت شروع ہوجاتی ہے ، لہٰذا خیریت اسی میں ہے کہ انسان خاموش رہے یا اللہ کا ذکر کرے۔

حضرت انس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ ایک صحابی کی وفات ہوگئی تو ایک شخص نے کہا کہ تجھے جنت کی خوشخبری ہے،یہ سن کرحضوراقدسﷺ نے فرمایا: تم جنت کی خوشخبری دے رہے ہو حالانکہ تمہیں معلوم نہیں کہ اس نے کوئی لایعنی بات کی ہوگی یا ایسی چیز خرچ کرنے سے کنجوسی کی ہوگی جس کے خرچ کرنے سے نقصان نہیں ہوتا۔(ترمذی)مثلاً علم دین سکھادینا یازکوٰۃ دینا وغیرہ۔

حضرت عبداللہ بن عمررضی اللہ عنہماسے روایت ہے کہ حضور اقدسﷺ سے فرمایا:’’من صمت نجا‘‘  یعنی جو خاموش رہا اس نے نجات پائی۔(بخاری)

یعنی دنیا وآخرت میں ان آفات وبلیات سے محفوظ رہا جوزبان سے متعلق ہیں۔

ایک حدیث میں ارشاد ہے: ’’من کان یؤمن باللّٰہ والیوم الآخر فلیقل خیرا اولیصمت‘‘

’’جو شخص اللہ پر اورآخرت کے دن پر ایمان رکھتا ہو اسے چاہیے کہ خیر کی بات کرے۔(اس میں ہر نیک بات آگئی جس میں ثواب ہو)یاخاموش رہے۔(بخاری ومسلم)

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor