Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

خواتین اسلام سے رسول اکرمﷺ کی باتیں (شمارہ 689)

خواتین اسلام سے رسول اکرمﷺ کی باتیں

(شمارہ 689)

اور سینکڑوں مردوں کی بھیڑ میں بال چمکاتی ہوئی، منہ دکھاتی ہوئی بڑی چادرلپیٹے بغیر اور برقعہ اوڑھے بغیر گھسی چلی جاتی ہیں، جیسے یہ سب لوگ ان کے باپ بھائی ہیں، پہلے تو یہی رونا تھا کہ عورتیں جیٹھ، دیوراور ماموں زاد، پھوپھی زاد اور چچازاد لڑکوں کے سامنے چہرہ کھولے آجاتی ہیں جو شرعاً گناہ ہے مگر اب چہرہ چھوڑ کرباریک کپڑے پہن کر اوپر کاپورا یا آدھابدن سب کے سامنے کھولے پھرتی ہیں اور برقعہ میں نقاب ایسا اختیار کرلیا ہے جو خوب باریک جالی کا ہوتا ہے اور پورا چہرہ راستہ کے چلنے والوں کو نظر آتا ہے یہ سب باتیں شرعاً سخت گناہ ہیں۔

 عورت کی نماز درست ہونے کے لیے شرط یہ ہے کہ اس کے چہرے اور گٹوں تک دونوں ہاتھ اوردونوں قدموں کے علاوہ پورا جسم ڈھکا ہوا ہو مگر حقیقت یہ ہے کہ اکثر عورتوں کی نماز اس لیے نہیں ہوتی کہ سر پر ایسا باریک دوپٹہ ہوتا ہے جس سے بال نظر آتے ہیں اور بعض عورتوں کی نماز اس لیے نہیں ہوتی کہ بانہیں کھلی ہوتی ہیںیا اگر ڈھانکی ہوئی ہیں تو اسی باریک دوپٹہ سے ڈھانک لیتی ہیں جس سے سب کچھ نظر آتا ہے ،بعض عورتیں ساڑھی باندھتی ہیں اور بلائوز اتنا چھوٹا ہوتا ہے کہ ناف پر ختم ہوجاتا ہے اور آدھا پیٹ نظر آتا ہے اس سے نماز نہیں ہوتی، اس کو خوب سمجھ لیں اور دنیا کے رواج کو نہ دیکھیں شریعت کو دیکھیں، دنیا میں تھوڑی سی گرمی کی تکلیف ہو ہی گئی اور فیشن والیوں نے کچھ کہہ ہی دیا تو اس سے کیا ہوتا ہے، جنت کے عمدہ کپڑے تو نصیب ہوں گے جہاں سب کچھ نفس کی خواہش کے مطابق ہوتا ہے۔

مردوں کو اپنی طرف مائل کرنے والی عورتیں

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضورانورﷺ نے ارشاد فرمایا : دوزخیوں کی دوجماعتیں میں نے نہیں دیکھی ہیں( کیونکہ وہ ابھی موجود نہیں ہوئیں، بعد میں ان کا وجوداور ظہور ہوگا) ایک جماعت ان لوگوں کی ہوگی جن کے پاس بیلوں کی دموں کی طرح کوڑے ہوں گے، ان سے لوگوں کو ظلماً ماریں گے۔ دوسری جماعت ایسی عورتوں کی ہوگی جو کپڑے پہنے ہوئے ہوں گی( مگر اس کے باوجود ) ننگی ہوں گی( مردوں کو) مائل کرنے والی اور (خود ان کی طرف ) مائل ہونے والی ہوں گی، ان کے سرخوب بڑے بڑے اونٹوں کے کوہانوں کی طرح ہوں گے جو جھکے ہوئے ہوں گے ،یہ عورتیں نہ جنت میں داخل ہوں گی اور نہ اس کی خوشبو سونگھیں گی اور اس میں شک نہیں کہ جنت کی خوشبو اتنی اتنی دور سے سونگھی جاتی ہے۔( مشکوٰۃ المصابیح: ص ۳۰۶از مسلم)

اس حدیث میں حضور اقدسﷺ نے دوایسے گروہوں کے متعلق پیشین گوئی فرمائی ہے جن کو آپﷺ نے اپنے زمانہ میں نہیں دیکھا تھا لیکن آج وہ دونوں گروہ اپنے شروفساد کے ساتھ موجود ہیں، خدا کے مقدس پیغمبرﷺ نے اول تو ان لوگوں کا ذکر فرمایا جو کوڑے لیے پھریں گے اور ان سے لوگوں کو ماریں گے یہ ان لوگوں کے بارے میں پیشین گوئی فرمائی جواپنے اقتدار کے نشہ میں بات بات پر کمزوروں اور بے بسوں کو پیٹ دیا کرتے ہیں۔ دیہات اور قصبات کے زمینداروں اور مال داروں کو دیکھا گیا ہے کہ تنگ دستوں اور بے کسوں کو جھوٹے سچے بہانے بنا کر پیٹتے ہیں، ان سے سینکڑوں کام بیگار میں لیتے ہیں اور طرح طرح کے ظلم و ستم ان پر ڈھاتے ہیں۔ اس سلسلہ میں بعض واقعات یہاں تک سنے گئے ہیں کہ اگر کسی کم حیثیت والے مسلمان نے کسی دولت مند مسلمان کوسلام کرلیا تو اس غریب کو اس جر م میں پیٹ ڈالا کہ اس نے اپنے آپ کو ہمارے برابر سمجھا، اللہ ایسے ظالموں سے بچائے، یہ بے کس اور بے بس مظلوم بندے جب آخرت میں مدعی ہوں گے اور وہاں قاضی روزجزاء کی عدالت میں پیشی ہوگی تو ظلم و ستم کے انجام کا پتہ چلے گا۔

کپڑے پہنے ہوئے بھی ننگی:

دوسری پیشین گوئی عورتوں کے حق میں ارشاد فرمائی کہ ایسی عورتیں موجود ہوں گی جو کپڑے پہنے ہوئے ہوں گی لیکن پھر بھی ننگی ہوں گی، یعنی اس قدر باریک کپڑے پہنیں گی کہ ان کے پہننے سے جسم کو چھپانے کا فائدہ حاصل نہ ہوگا یا باریک کپڑا تو نہ ہوگا مگر چست ہونے اور بدن کی ساخت پر کس جانے سے اس کا پہننا نہ پہننا برابر ہوگا،بدن پر کپڑے ہونے اور اس کے باوجود ننگا ہونے کی ایک صورت یہ بھی ہے کہ بدن پر صرف تھوڑا سا کپڑا ہواور بدن کا بیشتر حصہ اورخصوصاً وہ اعضاء کھلے رہیں جن کوباحیاء عورتیں غیر مردوں سے چھپاتی ہیں ،جیسا کہ یورپ اور ایشیا کے بعض شہروں مثلاً بمبئی، کلکتہ، رنگون، سنگاپور وغیرہ) میں ایسا لباس پہننے کا رواج ہے کہ گھٹنوں تک قمیص یافراک ہوتا ہے آستین یا تو ہوتی نہیں یا اس قدر کوتاہ ہوتی کہ مونڈھے سے صرف دوچارانچ ہی بڑھی ہوتی ہے ،پنڈلیاں بالکل ننگی ہوتی ہیں اور سر بھی دوپٹہ سے خالی ہوتا ہے اور فراک کا گلا آگے او ر پیچھے سے اس قدر فراخ اور چوڑا ہوتا ہے کہ کہ نصف کمر اور نصف سینہ نظر آتا ہے…

 ٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor