Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

عجائب قدرت۔ 490

عجائب قدرت

(شمارہ 490)

لسان العصا فیر

 یہ اس درخت کا میوہ ہے جس کو فارسی میں سروکہتے ہیں شیرازی میں اس کو تخم کواہر کہتے ہیں اور فارسی میں زبان کنجشک، اس کے پتے زخم کو مندمل کرتے ہیں۔شیخ رئیس کے نزدیک خفقان کو مفید اور مبہی اور مقوی قضیب ہے۔

لصف

اسے فارسی میں کبر کہتے ہیں یہ خراب زمین پر اگتی ہے صاحب الفلاحہ کاقول ہے کہ جب دہقان اس کی زمین کو درست کرتا ہے تو یہ گھاس معدوم ہوجاتی ہے اس کے میوہ کی پرورش نمک سے کرتے ہیں تو خوب پختہ ہوتا ہے اس کی جڑ میں مانند خیار کے ایک دوسرا میوہ ہوتا ہے اور وہ نہایت تیز ہوتا ہے اس کو شیرہ کے قوام میں ڈالتے ہیں تاکہ اس میں جو ش نہ آئے، اس کی جڑ کا ترچھلکا درددندان میں مفید ہوتا ہے اس کے پتے بواسیر کو نافع ہیں اور مبہی بھی ہیں اورایک قسم کا تریاق ہے خاص کر جس کے کان میں کوئی جانور موذی گھسا ہو اس وقت اگر اس کا عرق کان میں ٹپکادیں وہ جانور مرجائے گا اور بہق پر بھی لگانا نافع ہے۔

 لفاح

فارسی میں شاہنرج کہتے ہیں اس کی ایک قسم سفید برگ ہوتی ہے جس کی ساق نہیں ہوتی کہتے ہیں کہ وہ نر ہے۔ اس کا کثرت سے سونگھنا سکتہ کا عارضہ پیدا کرتا ہے اگر ایک ہفتہ اس کی مالش برص پر کریں مفید ہے اس کا سونگھنا درد سر دور کرتا ہے اور نیندلاتا ہے لیکن کندی حو اس پیدا کرتا ہے اس کاتخم اگر کبریت کے ساتھ ملا کر آگ میں رکھیں تو آگ اس میں نہ لگے گی۔ اگر عورت اس کا شافہ شہد میں ملا کر لے خون کا جریان بند ہو۔ لفاح دشتی جس کو یبروج بھی کہتے ہیں اگر اس کی جڑ انسان کے سخت آماس پر لگادیں مفید ہو اور نیز عارضہ خناز یر اور ریتلا اور درد مفاصل پر اس کا مرہم لگانا بہت نافع ہے،اس کے کھانے سے بیداری جاتی رہتی ہے۔اگر چھ گھڑی تک ہاتھی دانت کو اس کے ہمراہ پکاویں نرم و ملائم ہوجاتا ہے، اس طرح کہ پھر جوشے اس کی چاہیں ہاتھ سے بنالیں۔

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor