Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

طب نبویﷺ سے علاج ۔ 491

طب نبویﷺ سے علاج

(شمارہ 491)

جس جانور کی مدت حمل انسان کی مدت حمل سے طویل ہوتی ہے اس کادودھ اچھا نہیں ہوتا۔ تازہ دودھ معدل کیموس ہے بدن کو نکھارتا ہے اور مادئہ منویہ میں اضافہ کرتا ہے۔ قوت باہ میں ہیجان پیدا کرتا ہے ، دست آور ہوتا ہے، وساوس دور کرتا ہے دماغی قوت میں اضافہ کرتا ہے اور نفخ بھی پیدا کرتا ہے۔

 دودھ کا زیادہ استعمال جوئیں پیدا کرتا ہے۔ شکر کے ہمراہ استعمال کرنا رنگ کو خوبصورت بناتا ہے اور جلدی امراض جیسے خارش وغیرہ اس کو تسکین دیتا ہے۔

 جو دودھ پیٹ کے اندر کی چیزوں کے لیے مضر ہے وہ مسدد ہے سوائے اونٹنی کے دودھ کے کہ وہ استسقاء کی انواع امراض میں نافع ہے۔

حضرت انس رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ کچھ لوگ قبیلہ عکل یا عرینہ سے آئے، مدینہ منورہ کی آب وہوا ان کو موافق نہ آئی تو نبی کریمﷺ نے ان کواونٹنی کا دودھ اور ان کا پیشاب پینے کا حکم دیا، چنانچہ وہ گئے اور انہوں نے حکم کی تعمیل کی تو تندرست ہوگئے، انہوں نے آنحضورﷺ کے چرواہے کو قتل بھی کردیا۔( اخرجہ البخاری ومسلم وابودائود والترمذی و النسائی و ابن ماجہ)

مسلم کی روایت میں یوں ہے:’’ قدم رھط‘‘اور ’’رھط‘‘ کا لفظ تین سے نوتک کے افراد کے لیے بولا جاتا ہے، بعض کہتے ہیں کہ وہ آٹھ افراد تھے۔

حدیث میں مذکورلفظ’’اجتویٰ‘‘ کامعنی ہے موافق نہ آنا اور بدہضمی ہونا۔’’ جویٰ‘‘ پیٹ کی ایک بیماری ہے،’’ عکل‘‘ ایک قبیلہ ہے اور’’ عرینہ‘‘ بجیلہ کی ایک شاخ ہے اور حدیث میں مذکور لفظ’’ اللقام‘‘ کا معنیٰ دودھ والی اونٹنی۔ مدینہ منورہ آنے والے وہ لوگ مرض استسقاء میں مبتلا تھے، اس کا سبب ایک مادہ باردہ ہوتا ہے جو اعضاء کو تحلیل کرتا ہے جس سے وہ مادہ بڑھتا جاتا ہے اور یہ مرض لحمی، آبی اور طبلی تین قسم کا ہوتا ہے۔

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor