Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

طب نبویﷺ سے علاج ۔ 493

طب نبویﷺ سے علاج

(شمارہ 493)

’’ آنحضرتﷺ نے بھی اس کی منفعت کی خبردی ہے کہ تم پر گائے کا دودھ لازم ہے کہ وہ شفاء ہے اور اس کا گھی دوا ہے۔‘‘

حضرت ابن مسعودؓ فرماتے ہیں کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا:’’ اللہ نے جو بیماری بھی اُتاری ہے اس کی دوابھی اُتاری ہے پس تم کو گائے کا دودھ لازم ہے کیونکہ وہ ہر درخت میں سے کھاتی ہے۔‘‘

یہ حدیث دو پر مشتمل ہے:

 ۱)’’اللہ تعالیٰ نے ہر بیماری کی دوا اُتاری ہے‘‘ اس جملہ میں فن طب کی تعلیم حاصل کرنے کی رغبت دلائی گئی ہے، اس لیے کہ جب انسان کو یہ معلوم ہوگا کہ ہر بیماری کا علاج ممکن ہے اور ہر مرض کی دوا موجود ہے تو اسے علم طب کے سیکھنے کا ذوق و شوق پیدا ہوگا۔

 کیونکہ حفظانِ صحت ہی سب سے اہم مقصد ہے کہ اسی سے دین و دنیا کے امور حاصل ہوتے ہیں۔

 ۲) ان جانوروں کے دودھ کا کثیر المنافع ہونا بتایا گیا ہے جیسا کہ آنحضورﷺ نے کلمہ ’’ علیکم‘‘ استعمال فرمایا ہے جو اس امر کی تاکید کا متقاضی ہے۔

اس سے معلوم ہوتا ہے کہ جانوروں کے ان البان( دودھ) میں مختلف امراض کے لیے مختلف منافع ہیں۔ پھر یہ کہ آنحضرتﷺ نے محض تاکیدی حکم نہیں فرمایا بلکہ اس حکم کی علت بھی بیان فرمادی کہ:’’ وہ ہر درخت سے کھاتی ہے۔‘‘ اس لیے کہ البان( دودھ) مختلف ہوتے ہیں جانوروں کی چراگاہ کے مختلف ہونے کی وجہ سے۔ چنانچہ گرم چراگاہ، گرم دودھ بناتی ہے اور سرد چراگاہ، سرد بناتی ہے و علی ہذالقیاس آنحضورﷺ کا فرمان’’ترم‘‘( وہ کھاتی ہے) سے یہی مراد ہے کہ چراگاہ کے مختلف ہونے سے دودھ مختلف ہوتا ہے۔ لہٰذا یہ بات درست ثابت ہوئی کہ یہ دودھ بہت سے امراض میں نافع ہے۔

(جاری ہے)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor