Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

طب نبویﷺ سے علاج ۔ 503

طب نبویﷺ سے علاج

(شمارہ 503)

مِلْحٌ (نمک،SALT)

نمک، گرم خشک بدرجہ سوم ہے، نمک کا اعتدال کے ساتھ استعمال رنگ کو خوبصورت کرتا ہے، نمک دست آور بھی ہے اور قے کو بھڑکاتا ہے اور شہوت کو تیز کرتا ہے، نمک کا زیادہ استعمال خارش کوپیدا کرتا ہے۔

 مروی ہے کہ آنحضرتﷺ نے فرمایا کہ:

’’تمہارے سالن کا سردار نمک ہے۔‘‘( ابن ماجہ)

 حضرت ابن مسعودرضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ:’’ آنحضورﷺ نماز ادا کررہے تھے کہ اچانک ایک بچھو نے آپﷺ کی انگلی پر ڈنگ مارا، آپﷺ فارغ ہو کر کہنے لگے:بچھو پر خدا کی لعنت اس نے نہ کسی پیغمبر کو چھوڑا اور نہ کسی اور کو…پھر آپﷺ نے نمک ملا پانی منگوایا اور متاثرہ جگہ کو پانی اور نمک میں ڈالا اور سورۃ الاخلاص اور معوّذ تین( اس پر) پڑھی تو درد رک گیا۔‘‘( رواہ ابن ابی شیبہ)

مصنف کہتے ہیں کہ اس سے معلوم ہواکہ بچھو وغیرہ کے ڈسنے پر نمک کا استعمال مفیدہوتا ہے۔ ابن سینا کا قول ہے کہ بچھو کے ڈسنے پر نمک کا ضماد مع تخم کتان کیا جائے، اس لیے کہ اس میں حرارت کے سبب سردزہر کے مقابلہ کی تاثیر ہوتی ہے، زہر کو جذب کر کے اس کو تحلیل کرتا ہے۔

 حضرت ابو امامہ رضی اللہ عنہ سے مرفوعاً مروی ہے کہ:’’ جو شخص شام ہوتے وقت یہ پڑھے گا:

’’سلام علی نوح فی العالمین‘‘ تو اس رات بچھواسے نہیں ڈسے گا۔‘‘

 امام مسلمؒ کی روایت کردہ حدیث ابی ہریرہ رضی اللہ عنہ معروف ہے کہ: اگر تم شام کے وقت یہ دعا پڑھ لیتے’’اعوذ بکلمات اللّٰہ التامات من شرماخلق‘‘ تو کوئی چیز تمہیں گزندنہ پہنچاپاتی۔‘‘

نمک گوشت اور اس کی عفونت و بدبو کو بچاتا ہے، کھانوں اور جسموں کی اصلاح کرتا ہے حتی کہ یہ سونے اور چاندی کا بھی مصلح ہے کہ سونے کو زرداور چاندی کو سفید رکھتا ہے۔

 ’’معالم التنزیل‘‘ میں حضرت ابن عمررضی اللہ عنہما سے مرفوعاً منقول ہے کہ:’’ اللہ تعالیٰ نے آسمان سے چار برکتیں اُتاری ہیں:

۱)لوہا

۲)آگ

۳)پانی

۴)نمک

 ٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor