Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

طب نبویﷺ سے علاج ۔ 567

طب نبویﷺ سے علاج

(شمارہ 567)

جاننا چاہیے تعویذات اور جھاڑپھونک تب ہی فائدہ مند ثابت ہوتے ہیں جو اللہ کے ہاں قبول بھی ہوں اور انسان کی عمر اور زندگی بھی اس کی موافقت کرے اور یہ عمل دراصل اللہ کی بارگاہ میں ایک التجاء ہے کہ جس طرح مریض کو دوا دی جاتی ہے اسی طرح یہ دم وغیرہ کر کے اللہ سے ہی شفاء کی طلب رکھی جاتی ہے اور مذموم تعویذات وہ ہیں جو عربی زبان میں نہ ہوں اور جن کا معنی و مفہوم معلوم نہ ہو، اگر معلوم ہو تو مستحب ہے۔

 حضرت عوف بن مالک رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں کہ ہم زمانہ جاہلیت میں دم وغیرہ کیا کرتے تھے، تو لوگوں نے پوچھا کہ اے اللہ کے رسول !آپ اس بارے میں کیا حکم دیتے ہیں؟آپﷺ نے فرمایا:’’اپنے دم وغیرہ میرے سامنے پیش کرو، ایسے دم وغیرہ میں کوئی حرج نہیں جس میں کوئی شرکیہ کلمات نہ ہوں۔‘‘(مسلم)

بعض روایات میں یہ الفاظ ہیں کہ:’’نبی کریمﷺ کے پاس ایک آدمی آیا اور اس نے کہا کہ اے اللہ کے رسول: آپﷺ نے دم وغیرہ کرنے سے منع کیا ہے، حالانکہ میں بچھو کے ڈسنے کا دم کرتا ہوں، آپﷺ نے فرمایا کہ جو شخص اپنے بھائی کو نفع پہنچانے کی استطاعت رکھتا ہو اسے ایسا کرنا چاہئے۔‘‘(مسلم)

ممانعت کا تعلق کفریہ دم تعویذ سے ہے یا پھر ممانعت پہلے کی گئی تھی پھر اسے منسوخ کر دیا گیا۔ حضرت حربؒ کہتے ہیں کہ میں نے ابو عبداللہ سے بچھو کے ڈسنے کے دم کے بارے میں پوچھا تو انہوں نے اس میں کوئی مضائقہ نہیں سمجھا جبکہ اس کے کلمات معلوم ہوں یا قرآنی ہوں۔‘‘شفاء بنت عبداللہؓ فرماتی ہیں کہ’’نبی کریمﷺ میرے ہاں تشریف لائے اور میں اس وقت حضرت حفصہؓ کے پاس بیٹھی تھی آنحضورﷺ نے مجھ سے فرمایا :

اسے بھی غلہ کا دم سکھائو، جیسا کہ تم نے اسے کتابت سکھائی ہے۔‘‘( ابو دائود)

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor