Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

طب نبویﷺ سے علاج ۔ 590

طب نبویﷺ سے علاج

(شمارہ 590)

معدہ ایک عصبی مجوف عضو ہے مثل کدو کے جس کی گردن لمبی ہو، اس کے اوپر کے سرے کو المری کہتے ہیں، جس میں کھانا پینا منحدر ہوتا ہے اور نیچے والے سر ے کو ابواب کہتے ہیں ،یہاں سے گادآنتوں میں جاتی ہے اورمعدہ کے منہ کوفواد کہتے ہیں اور اس کے اندرونی حصہ میں ریشے ہوتے ہیں اور وہ پیٹ کا وسط حصہ ہوتا ہے۔ یہ بیماری کا گھر ہے جبکہ وہ پہلے ہضم کا محل ہو، کیونکہ اس میں غذا پکتی ہے اور جگرکی طرف متحدد ہوتی ہے اور ریشہ بناتی ہے تاکہ غذا کی کثرت کے وقت پھیلائو کو قبول کر سکے اور منقطع نہ ہونے پائے۔

اوراس کے ساتھ ہی باریک تین آنتیں ہیں، پہلی آنت کو اثنا عشری کہتے ہیں اس کا طول بارہ انگل ہوتا ہے، دوسری کا نام صائم ہے، کیونکہ وہ اکثر اوقات میں خالی رہتی ہے اور تیسری کو لفایفی کہتے ہیں، یہ طویل اور باریک پٹی ہوتی ہے پھر ان تین آنتوں کے بعد تین غلاف ہوتے ہیں ،پہلے کو اعور کہتے ہیں وہ کافی وسیع ہوتا ہے اس میں کوئی منفذ( راہ) نہیں جو دوسری جانب جاتی ہو اور اس میں پاخانہ بدبودار ہوتا ہے اور دوسری کو لون کہتے ہیں اور تیسرے کو المستقیم کہتے ہیں اور اس کی جانب مخفی ہے چنانچہ یہ چھ آنتیں ہیں اور ایک معدہ ،کل سات آنتیں بنیں۔ جن کو رسول اللہﷺ نے مذکورہ حدیث میں بیان فرمایا ہے۔

 ابن سینا کا قول ہے: اللہ تعالیٰ کی بندے پر یہ بڑی عنایت ہے کہ اس نے متعدد آنتیں اور غلاف تخلیق کیے ہیں تاکہ معدہ سے کھانا منحدر ہو اور معدہ ہی ہر بیماری کی جڑ ہے۔‘‘

حضورﷺ نے فرمایا کہ معدہ، بیماری کا گھر ہے، نیز فرمایا کہ جب معدہ بیمار پڑتا ہے تو رگیں بھی فاسد رطوبات کے ساتھ اعضاء جسم کی طرف جاتی ہیں۔( اس پر گفتگو پہلے ہو چکی ہے)

 جاننا چاہئے کہ اللہ تعالیٰ سبحانہ و تعالیٰ نے حیوان کے بدن کو بہت سے اعضاء سے نوازا ہے اور ہڈیوں کو بدن کے لیے ستون بنایا ہے اور پھر بدن میں ایک نہیں کئی ہڈیاں پیدا کی ہیں، کیونکہ مختلف قسم کی حرکتوں کی بدن کو ضرورت ہوتی ہے، اگر بدن میں ایک ہی ہڈی ہوتی تو لامحالہ بدن مختلف حرکتیں نہ کرپاتا۔

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor