Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

طب نبویﷺ سے علاج ۔ 607

طب نبویﷺ سے علاج

(شمارہ 607)

اللہ تعالیٰ فرماتے ہیں کہـ:’’لاتلھکم اموالکم ولا اولادکم عن ذکر اللّٰہ‘‘

’’تم کو تمہارے مال اور اولاد اللہ کی یاد سے غافل نہ کرنے پاویں۔‘‘

مطلب یہ ہے کہ یہ چیزیں تمہیں نماز اور عبادت سے غافل نہ کریں، معلوم ہوا کہ جس کو سماع اورغنا عبادت خداندی سے غافل کرتا ہو اور نماز سے دور کرتا ہو وہ خسارہ اُٹھانے والوں میں سے ہے۔

 اللہ تعالیٰ نے مومنین کویوںمخاطب کیا :

واذارأوا تجارۃ او لھوا انفضواالیھا وترکوک قائما(الجمعہ:۱۱)

’’اور وہ لوگ جب کسی تجارت یا مشغولی کی چیز کودیکھتے تو وہ اس کی طرف دوڑنے کے لئے بکھر جاتے ہیں اور آپ کو کھڑا ہوا چھوڑ جاتے ہیں۔‘‘

اللہ کی ذات کریمی نے مسلمانوں کو مباح تجارت اور جائز کھیل سے منع نہیں کیا اور اس پر کوئی سختی نہیں کی ہے، ہاں البتہ اگر ان کاموں میں منہمک ہو کر جمعہ، جماعت اور فرض نماز کو ترک کردیا جائے تو یہ ممنوع ہوگا۔

اور اس کے ماسوا دیگر کھیلوں کے بارے میں سکوت اختیار کیا ہے لہٰذا وہ بھی دائرہ شریعت میں رہتے ہوئے جائز ہوں گے۔

 نبی کریمﷺ بھی بسااوقات ہنستے اور مسکراتے تھے اور بعض اوقات آنحضورﷺ اپنی زوجہ مطہرہ سے مزاح بھی فرماتے بلکہ دوڑ کا مقابلہ بھی کیا کرتے تھے۔ ایک مرتبہ اپنے نواسوںحسن و حسین رضی اللہ عنہما کو اپنی پشت مبارک پر سوار کرلیا اور فرمانے لگے:نعم الرجل جملکما یعنی تمہارا اونٹ( سواری) کیا ہی اچھا انسان ہے! آپﷺ بعض اوقات ایسے گھوڑے پرسوار ہوجاتے تھے جس کی پشت ننگی ہوتی، فتح مکہ کے دن اپنی اونٹنی پر سوار ہو کر داخل ہوئے تو بلند آواز سے کہہ رہے تھے :تجھ پر میرے ماں باپ فدا ہوں۔ نیز آپﷺ اس موقع پر سورۃ الفتح کی تلاوت حسین آواز سے کررہے تھے اور فرمارہے تھے کہ اہ، اہ ،اہ۔‘‘اور فرماتے :اے عامر! ہمیں اپنے کچھ اشعار تو سنائو!‘‘

(جاری ہے)

 

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor