Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

طب نبویﷺ سے علاج ۔ 609

طب نبویﷺ سے علاج

(شمارہ 609)

بیماروں کو قوت بخش چیز کھلانا

اس سے پہلے بھی اُمّ المنذر کی حدیث گزر چکی ہے کہ’’ پھر میں نے ان لوگوں کے لیے چقندر اور جو تیار کیے۔‘‘

نیز حضرت عائشہ رضی اللہ عنہافرماتی ہیں کہ’’حضور اکرمﷺ کے گھر والوں کو جب بخار ہوتا تو آپﷺ حساء بنانے کا حکم دیتے جو تیار کیا جاتا، پھر آپﷺ ان کو پینے کا حکم دیتے، چنانچہ انہوں نے اسے پیا‘‘ آپﷺ فرمایا کرتے تھے کہ’’درحقیقت حساء، غمزدہ دل کو طاقت پہنچاتا ہے اور بیمار کے دل سے رنج و کلفت کو اس طرح دور کردیتا ہے جس طرح تم( عورتوں) میں سے کوئی اپنے چہرہ کے کیل کو پانی سے صاف کرڈالتی ہے۔‘‘

’’حساء‘‘ کھانے کی قسم کی ایک رقیق چیز ہوتی ہے جو آٹا، پانی اور گھی کو ملا کر پکائی جاتی ہے۔ حضرت عائشہ رضی اللہ عنہاسے روایت ہے کہ جب رسول اللہﷺ کو بتایا جاتا کہ فلاں شخص کھانا نہیں کھا رہا ہے تو فرماتے:’’تلبینہ استعمال کرو اور اس کو یہی پلائو۔‘‘

نیز ان سے روایت ہے کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا:’’ تلبینہ‘‘بیمار کے دل کو تسکین و قوت دیتا ہے اور بعض غموں کو دور کرتا ہے۔‘‘( بخاری)

’’تلبینہ‘‘ اس حریرے کو کہتے ہیں جوجو اور دودھ سے بنایا جاتا ہے اور کبھی اس میں شہد بھی ملادیتے ہیں، چونکہ اس حریرہ کا خاص جزو دودھ ہوتا ہے اور دودھ کی طرح سفید ہوتا ہے ،اس لیے اس کو دودھ سے تشبیہ دیتے ہوئے تلبینہ کہا جاتا ہے اور یہ لفظ (تلبینہ) بھی لبن(دودھ) سے مشتق ہے۔

آپﷺ نے فرمایا کہ:’’تلبینہ رنج و کلفت کو دور کرتا ہے‘‘ اس کی وجہ یہ ہے کہ رنج وغم، مزاج کو سرد اور حرارت کو کمزور کردیتے ہیں اور’’حساء‘‘ حرارت کو قوی کرتا ہے اور اس کو بڑھاتا ہے۔ نیز حضرت عائشہ رضی اللہ عنہاسے منقول ہے کہ وہ تلبینہ( بنانے اور استعمال کرنے) کا حکم دیتی تھیں اور فرماتی تھیں کہ’’تلبینہ بہت نفع بخش ہوتاہے اور مریض کے لیے انتہائی ناگوار چیز ہے۔‘‘

مسلم کی روایت میں یہ ہے کہ’’ حضرت عائشہ رضی اللہ عنہامریض کے لیے تلبینہ کا حکم دیتی تھیں۔(بخاری)

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor