Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

الادب والادیب ۔ 607

الادب والادیب

(شمارہ 607)

دشمن کو روکنے کی میں تدبیر کیا کروں

باقی بچا ہے ایک ہی بس تیر کیا کروں

 کٹتے نہیں ہیں اب یہ اسیری کے رات دن

چبھنے لگی ہے پائوں میں زنجیر کیا کروں

دو دِچراغ بزم کی مانند اُڑ گئی

اب آہ ہے،نہ آہ کی تاثیر کیا کروں

پستی نہیں ہے کوئی بھی حدنگاہ تک

ایسی جگہ مکان ہیں تعمیر کیا کروں

سب کچھ لٹا دیا ہے محبت کی راہ میں

قربانیوں کی اپنی، میں تشہیر کیا کروں

 شاہوں کے جبر و ظلم وستم کھل کے لکھ چکی

اب اس کے بعد اور میں تحریر کیا کروں

دربار شہنشاہی میں جو سچ تھاکہہ دیا

مقتل میں آکے اور میں تقریر کیا کروں

کیوں میرے پاس چھوڑ کے بابرؒ چلا گیا

 جب وہ نہیں تو اس کی میں تصویر کیا کروں

(ہمشیرہ بابر آفریدی شہیدؒ)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor