Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

الادب والادیب ۔ 608

الادب والادیب

(شمارہ 608)

دریا کہا ں ہے، قطرہ وموج و حباب میں

کیسے چلائوں زیست کی کشتی سراب میں

پھر بھی گرادیا مجھے رخش حیات نے

 ہاتھوں میں جبکہ باگ تھی پائوں رکاب میں

 اب تاب ہی کہاں، کہ فرشتوں سے کچھ کہوں

اُلجھا دیا ہے مجھ کو سوال و جواب میں

عالم میں جن کی تیغ امن کا نشان تھی

وہ قوم کھوکے رہ گئی چنگ ورباب میں

 دیکھے ہیں ہم نے پھول سے چہرے لہو لہو

سچ بولنا ہے جرم’’خطیبو‘‘خطاب میں

برق تپاں سے صرف نشیمن نہیں جلا

گلشن بھی جل گیا ہے اسی التہاب میں

زنجیر عدل آج ہلانا فضول ہے

مشغول بادشاہ ہے شراب و کباب میں

 شاہوں کا تخت و تاج سمندر میں پھینک دو

کیسے پتے کی بات لکھی ہے کتاب میں

اے شہنشاہ وقت ذرا دیکھ بھال کے

آیا ہے ایک شخص رعایا کے خواب میں

(ہمشیرہ بابر آفریدی شہیدؒ)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor