Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

الادب والادیب ۔ 619

الادب والادیب

(شمارہ 619)

عاشقی خونِ جگر مانگے ہے کیوں

شام ہوتے ہی سحر مانگے ہے کیوں

بھیک میں لعل وگہر ملتے نہیں

بھیک میں لعل وگہر مانگے ہے کیوں

اور بھی دنیا میں ہیں لاکھوں حسیں

دل اسی کو بام پر مانگے ہے کیوں

باغباںنے جب باغبانی چھوڑدی

ہر شجر پر پھر ثمر مانگے ہے کیوں

بیٹھ کر شیشے کے گھر میں شیشہ گر

سنگ آہن کا ہنر مانگے ہے کیوں

جو پہاڑوں کے جگر کو چیر دے

ایسی روحانی نظر مانگے ہے کیوں

ظلم کو جو ظلم کہتا ہی نہ تھا

اب وہ شمشیر و تبر مانگے ہے کیوں

گھپ اندھیرے میں بھی کٹ جاتی ہے رات

دل کو اکب و قمر مانگے ہے کیوں

(ہمشیرہ بابر آفریدی شہیدؒ)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor