Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

الادب والادیب ۔ 644

الادب والادیب

(شمارہ 644)

نفرت کا اندھیراہے، اُجالا نظر آئے،

تارے کی طرح کوئی چمکتا نظر آئے

یارب !تیری دنیا کا یہ دستور ہے کیسا

جو کھیت اُگائے وہی بھوکا نظر آئے

کیا اس لئے برسات کا آیا تھا مہینہ

پانی کو ترستا ہوا دریا نظر آئے

کیا اس لئے نفرت کا گلا گھونٹا تھا ہم نے

ہر شخص محبت کو تر ستا نظر آئے

کیا اس لئے بینائی عطا کی تھی خدانے

ہر روز نیا اک تماشا نظر آئے

 ہوتا ہے یہی عشق میں ، ہوجائے اگر عشق

مجنوں جہاں دیکھے وہاں لیلیٰ نظر آئے

ہر شخص کے ہے ہاتھ میں دودھار کا خنجر

اس شہر میں کوئی تو مسیحا نظر آئے

میں اپنے نشیمن کی رکھوں گی وہاں بنیاد

ہر شخص کا چہرہ جہاں ہنستا نظر آئے

(ہمشیرہ باہرآفریدی شہیدؒ)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor